Close
گفتگو ڈاٹ پی کے پر خوش آمدید

اس سال جیوپیٹر زمین کے نزدیک ترین کب آیا؟

بتول تالپور

جیوپیٹر سیارہ زمین کے بہت نزدیک ترین دیکھنے میں آیا۔
ناسا نے سیارگان سے دلچسپی رکھنے والے افراد کو یہ خوشخبری سنادی تھی۔ کہ دس جون دو ہزار انیس کو سیارہ جیوپیٹر یعنی مشتری زمین سے نہایت قریب ترین ہوگا ۔ ناسا نے یہ بھی کہا کہ اس کے چاند کو دیکھنے کے لیے binocular کی ضرورت ہوگی ۔
فاصلہ 398ملین تھا۔ ناسا کے مطابق پوری رات اس کو دیکھا جاسکتا ہے ۔ ایسا اس لیے ممکن ہوتاہے کیوں کہ سال میں ایک بار جیوپیٹر یعنی مشتری سیارہ زمین اور سورج ایک سیدھی لائن کی طرح ہوجاتے ہیں۔ زمین مشتری اور سورج کے بیچ میں ہوتی ہے ۔
اس سال دس جون بروز پیر جیوپیٹر یعنی مشتری سیارہ جو کہ سب سے بڑا سیارہ ہے زمین سے دیکھا گیا ۔ ناسا نے البتہ لوگوں کو مشورہ بھی دیا کہ binocular یا چھوٹی ٹیلی اسکوپ خرید کر اگر اس سیارے کا نظارہ کیا جائے تو کافی دلچسپ اور خوبصورت نظارہ دیکھنے کو ملے گا ۔
اتنے قریب آجانے کی وجہ سے سیارہ مشتری کے چار بڑے چاند اس کےایٹما سفیرک ڈیٹیلز کا نظارہ بھی باآسانی چھوٹی ٹیلی اسکوپ کی مدد سے کیا گیا ۔ جب کہ ریڈ اسپاٹ کا نظارہ بڑے ٹیلی اسکوپ کی مدد سے ہی ممکن تھا ۔
پانچ دن بعد یعنی پندرہ جون 2019ء کی شام کو سورج غروب ہونے پر مشتری سیارہ ستارہ انتاریس کے ساتھ چاند سمیت ایک تکون کی شکل میں دیکھا گیا ۔ یہی نظارہ 16 جون کی شام کو بھی دیکھا گیا ۔
سیارہ مشتری یعنی جوپیٹر کا فاصلہ زمین سے دس جون کو 398 ملین تھا ۔ یہ فاصلہ پچھلے سال کے مقابلے میں گیارہ ملین میل زیادہ قریب فاصلہ ہے ۔ کھلی آنکھوں سے سیارہ مشتری کو ایک چمکتے ہوئے ستارے کی طرح دیکھا گیا ۔جبکہ ٹیلی اسکوپ کی مدد سے اس کو مزید قریب سے دیکھا گیا۔۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

0 Comments
scroll to top